twitter.com/rasin_baloch

Blog Archives

Status

الیکٹ ایبل اور تبدیلی

ہمارے رہنماؤں کے ہاں تبدیلی صرف ان کا اقتدار میں آنے کا نام ہے اصول، نظریہ، جمہوری حکمت عملی تو صرف و صرف تھیوریٹکل باتیں ہیں جن کا استمال سادہ لوح عوام کو بہلانے کےلئے ہوتا ہے ۔

اقتدار کے ہوس میں الیکٹ ایبل لوٹوں کی فوج بنانا کوئی سیاسی معجزہ نہیں بلکہ اس بات کا اعتراف ہے کہ طاقت کا سرچشمہ عوام نہیں بلکہ الیکٹ ایبل لوٹے ہیں۔

پاکستان کی سیاسی تاریخ اس بات کی گواہ ہی چاہیے آمریت ہو یا جمہوریت یہ ہی الیکٹ ایبل لوٹے کسی نہ کسی روپ میں ایوانوں میں ضرور ملیں گے۔

حکومت کسی فرد کی نہیں ہوتی بلکہ عوام کی ہوتی ہے اور جب طاقت کاسرچشمہ عوام فر بجائے الیکٹ ایبل لوٹے ہوں تو وہاں بڑے سے بڑا رہنماء بھی الیکٹ ایبل لوٹے کے ہاتھوں یرغمال ہوتا ہے۔

Advertisements
Status

شاعری

یہ وہ بدبخت قوم ہے جس کی شاعری کا آغاز فلسفے سے ہوا تھا اور اب شاعری مایوسی، ناکام عاشق کے نوحے اور واہ واہ کی داد کے سوا کچھ بھی نہیں 

Status

ہمارے ہر فن مولا صحافی

‏ہمارے جرنلسٹ کمال قابلیت کے حامل ہیں ‏وہ صحافت کے ساتھ ساتھ 

‏سیاستدان قانون دان سائنسدان اور بہت سے دان بن کے اس قوم کو گمراہ کرتے ہیں

Tag Cloud