twitter.com/rasin_baloch

محمد عامر قومی ٹیم کے 16 رکنی اسکوڈ کا حصہ تو بن گیا مگر ایک روکاوٹ اور بھی ہے کہ نیوزیلینڈ کا ویزہ ملتا ہے کہ نہیں کیونکہ نیوزی لینڈ کے امیگریشن ایکٹ 2009 کے سیکشن 15 اور 16 کے تحت کچھ افراد نیوزی لینڈ کا ویزہ لینے کے اہل نہیں ہوتے ہیں سزا یافتہ شخص بھی ایسے ہی افراد میں شامل ہیں۔

قانون پتھر کی لکیر نہیں ہوتے قانون ہمیشہ لچکدار ہوتے ہیں جہاں حالات کے مطابق فیصلے کئے جاتے ہیں 

نیوزی لینڈ کا قانون بھی اس حوالے سے کچھ حد تک لچکدار ہے اسی قانون کا سیکشن 17 سزا یافتہ اور دیگر افراد کو جن کو سیکشن 15 اور 16 کے تحت ویزہ سے نااہل قرار گیا ہے کو رعایت دیتا ہے

ایسے افراد رعایت کی درخواست کر سکتے ہیں جن کو تمام عمر میں کل ملا کے 5 سال یا اس سے زیادہ کے قید کی سزا نہ ملی ہو دوسری صورت میں پچھلے 10 سال میں اسے 12 ماہ یا اس سے زیادہ کی قید کی سزا نہیں ہوئی ہو 

عامر کو ایک سال کی سزا ہوئی تھی وہ رعایت کا مستحق تو ہے مگر رعایت کا اختیار پورا کا پورا discretionary powes ہے جو امیگریشن حکام کے اپنی مرضی پر منحصر ہے 

میرے اندازے کے مطابق محمد عامر کو ویزہ ملنے کے 70 فیصد امکانات ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

Tag Cloud

%d bloggers like this: